Sitting on 18th May 2021

Print

List of Business

 

صوبائی اسمبلی پنجاب

 

 

 

منگل  18مئی2021کو 2:00بجے دوپہر منعقد ہونے والے اسمبلی کے اجلاس کی فہرست کارروائی

 

 

 

تلاوت  اور نعت

 

 

 

سوالات

 

محکمہ  ہاؤسنگ، شہری ترقی و پبلک ہیلتھ انجینئرنگ سے متعلق سوالات

 

دریافت کئے جائیں گے اور ان کے جوابات دیئے جائیں گے۔

 

 

 

زیرو آور نوٹسز

 

علیحدہ فہرست میں مندرج زیرو آور نوٹسز

 

لئے جائیں گے اور ان کے جوابات دیئے جائیں گے۔

 

 

 

غیرسرکاری ارکان کی کارروائی

 

 

 

                                                                                                                                                                                                                                               

 

 

 

حصہ اول

 

 

 

 

 

 

 

 

 

(مسودہ  قانون)

 

 

 

            THE PUNJAB COMPULSORY TEACHING OF THE HOLY QURAN (AMENDMENT) BILL 2021.

 

 

 

 

 

MIAN SHAFI MUHAMMAD :

MS KHADIJA UMER :

MR SAJID AHMED KHAN :

 

MIAN SHAFI MUHAMMAD :

MS KHADIJA UMER :

MR SAJID AHMED KHAN :

to move that leave be granted to introduce the Punjab Compulsory Teaching of the Holy Quran (Amendment) Bill 2021.

 

to introduce the Punjab Compulsory Teaching of the Holy Quran (Amendment) Bill 2021.

 

.........

 

 

 

                                                                                                                                                                                                                                               

 

حصہ دوم

 

 

 

 

 

 

 

 

 

(مفاد عامہ سے متعلق قراردادیں)

 

(مورخہ 6 مئی 2021 کے ایجنڈے سے زیر التواء قراردادیں)

 

 

 

.1

محترمہ شازیہ عابد :

 

اس ایوان کی رائے ہے کہ صوبہ پنجاب کے میڈیکل کالجوں میں سندھ کے طلبہ کے لئے مختص ایم بی بی ایس اور بی ڈی ایس کی نشستیں ختم کرنے کے فیصلے کو واپس لے کر ان نشستوں کو دوبارہ بحال کیا جائے۔

 

.........

 

 

 

 

 

.2

شیخ علاؤ الدین :

(پیش ہو چکی ہے)

یہ معزز ایوان وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ (Resident) اور (Non-Resident) پاکستانیوں کے لئے شرح منافع جو (Non-Resident) کے لئے 7% غیرملکی کرنسی پر اور ملکی کرنسی پر 11% تک دیا جا رہا ہے۔ جبکہ (Resident) پاکستانیوں کو غیرملکی کرنسی پر مشکل سے 1% اور پاکستانی کرنسی پر 3% سے 4% دیا جا رہا ہے اور (Resident) پاکستانیوں سے اس منافع پر بھی 35% تک ٹیکس لیا جا رہا ہے جبکہ (Non-Resident) سے منافع کی حد کے قطع نظر صرف 10% لیا جا رہا ہے۔ اس ظلم اور زیادتی کو فوری طور پر ختم کیا جانا ضروری ہے اور یکساں شرح منافع کا ملنا انتہائی ضروری ہے۔

 

.........

 

 

 

.3

جناب احسان الحق :

جناب محمد افضل :

اس ایوان کی رائے ہے کہ پنجاب بیت المال 1991 میں قائم ہوا تھا، لیکن 29 برس گزرنے کے باوجود اس کے ضلعی فنڈز میں اضافہ نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے غریب، معذور اور مستحق آبادی بری طرح متاثر ہو رہی ہے جبکہ پنجاب کی آبادی میں کئی گنا اضافہ ہوگیا ہے۔ صوبائی اسمبلی پنجاب کا یہ ایوان مطالبہ کرتا ہے کہ پنجاب بیت المال کے ضلعی فنڈز میں اضافہ کیا جائے۔

 

.........

 

 

 

.4

محترمہ خدیجہ عمر :

(پیش ہو چکی ہے)

2007 میں بچوں کے تحفظ کیلئے چائلڈ پروٹیکشن بیورو کا محکمہ بنایا گیا تھا جو اس وقت کی حکومت کا بڑا احسن اقدام تھا۔ یہ ادارہ بے سہارا اور لاوارث بچوں کو تحفظ فراہم کر رہا ہے۔ اپنے قیام سے لے کر آج تک اس محکمہ کے ملازمین کو کنفرم نہیں کیا گیا۔ بےسہارا اور لاوارث بچوں کو تحفظ فراہم کرنے والے ملازمین کو اپنی ملازمتوں کا تحفظ فراہم نہ ہے۔ لہذا اس ایوان کی رائے ہے کہ چائلڈ پروٹیکشن بیورو کے ملازمین کا سروس سٹرکچر بناتے ہوئے تمام ملازمین کو بھی دیگر سرکاری محکمہ جات کی طرح مستقل کیا جائے اور ریٹائرمنٹ پر پنشن و دیگر سہولیات فراہم کی جائیں۔

 

.........

 

 

 

.5

جناب محمد طاہر پرویز :

(پیش ہو چکی ہے)

اس ایوان کی رائے ہے کہ صوبائی دارالحکومت میں تمام چھوٹی بڑی شاہراہوں پر ٹریفک کا بےہنگم رش دن بدن بڑھ رہا ہے، جس کے باعث حادثات کی شرح میں اضافہ ہو رہا ہے اور جس کی بنیادی وجہ شاہراہوں پر سروس روڈ کا نہ ہونا ہے۔ خاص طور پر سائیکل سوار کو بےہنگم ٹریفک کے باعث کافی دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ لہذا  صوبائی اسمبلی پنجاب کا یہ ایوان صوبائی حکومت سے اس امر کی سفارش کرتا ہے کہ صوبائی دارالحکومت میں واقع تمام چھوٹی بڑی سڑکوں کے ساتھ سروس روڈ بنایا جائے۔ نیز آئندہ سے تمام نئے منصوبہ جات میں اس امر کو یقینی بنایا جائے کہ ہر نئی سڑک کے ساتھ سروس روڈ بن سکے اور سائیکل سوار اور پیدل چلنے والوں کے لئے آسانی پیدا ہوسکے۔

 

.........

 

 

 

 

 

لاہور

محمد خان بھٹی

مورخہ:17 مئی 2021

سیکرٹری

 

Summary of Proceedings

Not Available

Resolutions Passed

 

قرار داد نمبر: 94

 

محرک کا نام:  جناب محمد بشارت راجہ وزیر قانون

 

"اللہ کے آخری نبی رسول ﷺ نے فرمایا کہ اگر کہیں ظلم  ہو رہا ہو گا اور دوسرے مسلمان اس پر خاموش ہونگے احتجاج نہیں کریں گے اپنا حتی المقدور کردار جو ان کے بس میں ہے اس ظلم کو روکنے  کیلئے ادا نہیں کریں گے تو  اللہ کے آخری نبی رسولﷺ نے فرمایا یہ بھی اس کے اندر مبتلا کئے جائیں گے۔

 

55 اسلامی ممالک  اس روئے  زمین پر موجود ہیں جو اپنی نسبت اللہ کے آخری نبی رسول ﷺ سے کرتے ہیں اور ان ممالک کے حکمران بھی موجود ہیں ان کے لوگ بھی موجود ہیں ان کی تنظیمیں بھی موجود ہیں ان کی اجتماعی فورسز بھی موجود ہیں اس پر ہمیں امت مسلمہ کو ایک ساتھ ایک آواز ہو کر طاقت کا مظاہرہ کرنا ہو گا۔ یہ ہمارے کلمہ گو مسلمان بھائی ہیں ہم سب اللہ کے آخری  نبی رسول ﷺ کے دامن سے وابستہ ہیں ان مظلوموں پر ظلم کیا جا رہا ہے ہمیں اپنے مفادات سے نکل کر عملی میدان میں آگے آنا ہو گا۔ پوری دنیا کے اندر ایک ارب 65 کروڑ مسلمان  بستے ہیں اتنی بڑی قوت اور آواز ہے اگر سب یہ آواز بلند کریں تو ان کی آواز پوری دنیا کے اندر سنی  جائے گی۔

 

صوبائی اسمبلی پنجاب کا یہ ایوان غزہ پر حالیہ اسرائیلی جارحیت اور اس کے نتیجے میں خواتین اور معصوم بچوں سمیت بے گناہ اور نہتے فلسطینی مسلمانوں کے بہیمانہ قتل عام کی بھرپور مذمت کرتا ہے۔ یہ ایوان مظلوم فلسطینی عوام سے مکمل اظہار یکجہتی کرتا ہےاور ان حملوں کی آڑ میں اسرائیل کے توسیعی منصوبے کو مسترد کرتا ہے۔

 

 اس ایوان کی رائے ہے کہ

 

·                   فلسطین میں حالات کی خرابی کا ذمہ دار اسرائیل ہے۔

 

·                   اسرائیل نے بین الاقوامی قوانین کی دھجیاں اڑاتے ہوئے رمضان کے مقدس مہینے میں نہتے فلسطینیوں پر بدترین تشدد کیا  اور مسجد اقصیٰ سمیت مقدس مقامات کی بے حرمتی کی۔

 

·                   یہ حملے طویل عرصہ سے جاری اسرائیلی بربریت اور ظلم کا تسلسل ہے۔

 

·                   نہتے شہریوں پر حملے کرکے اسرائیل جنگی جرائم کا مرتکب ہوا ہے۔

 

یہ ایوان مطالبہ کرتا ہے کہ

 

·                   مقدس مقامات کی بے حرمتی  بند کی جائے۔

 

·                   بے گناہ اور نہتے شہریوں پر حملوں کو فوری طور پر روکا جائے۔

 

·                   انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بند  کی جائیں۔

 

·                   عالمی برادری اسرائیلی جارحیت رکوانے کے لئے اپنی ذمہ داریاں پوری کرے۔

 

·                   سلامتی کونسل امن کے قیام کے لئے اپنا کردار ادا کرے۔

 

یہ ایوان وفاقی حکومت سے سفارش کرتا ہے کہ

 

·                   اسرائیلی بربریت  کی مذمت اور اسے رکوانے کے لئے بھرپور کردار ادا کیا جائے۔

 

·                   پاکستانی عوام کے جذبات اور احساسات کو اقوام متحدہ اور اسلامی ممالک کی عالمی تنظیم OIC نیز انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں تک پہنچایا جائے۔

 

عالمی سطح پر فلسطین کی سیاسی اور اخلاقی حمایت کا اعادہ کیا جائے اور فلسطینی عوام تک یہ پیغام پہنچایا جائے کہ مصیبت کی اس گھڑی میں وہ تنہا نہیں ہیں اور پاکستانی عوام ان کے ساتھ کھڑے ہیں۔"