Sitting on 6th May 2021

Print

List of Business

 

 

صوبائی اسمبلی پنجاب

 

 

 

جمعرات 6 مئی2021کو 11:30بجے صبح منعقد ہونے والے اسمبلی کے اجلاس کی فہرست کارروائی

 

 

 

تلاوت  اور نعت

 

 

 

سوالات

 

محکمہ  جیل خانہ جات سے متعلق سوالات

 

دریافت کئے جائیں گے اور ان کے جوابات دیئے جائیں گے۔

 

 

 

زیرو آور نوٹسز

 

علیحدہ فہرست میں مندرج زیرو آور نوٹسز

 

لئے جائیں گے اور ان کے جوابات دیئے جائیں گے۔

 

 

 

غیرسرکاری ارکان کی کارروائی

 

حصہ اول

 

 

 

(مسودہ  قانون)

 

 

 

            THE NUR INTERNATIONAL UNIVERSITY LAHORE (AMENDMENT) BILL 2021.

 

 

 

 

MIAN SHAFI MUHAMMAD :

MS KHADIJA UMER :

 

MIAN SHAFI MUHAMMAD :

MS KHADIJA UMER :

 

to move that leave be granted to introduce the Nur International University Lahore (Amendment) Bill 2021.

 

to introduce the Nur International University Lahore (Amendment) Bill 2021.

 

.........

 

حصہ دوم

 

 

 

 

(مفاد عامہ سے متعلق قراردادیں)

 

 

 

(مورخہ 9 مارچ 2021 کے ایجنڈے سے زیر التواء قراردادیں)

 

 

 

.1

محترمہ شازیہ عابد :

اس ایوان کی رائے ہے کہ صوبہ پنجاب کے میڈیکل کالجوں میں سندھ کے طلبہ کے لئے مختص ایم بی بی ایس اور بی ڈی ایس کی نشستیں ختم کرنے کے فیصلے کو واپس لے کر ان نشستوں کو دوبارہ بحال کیا جائے۔

.........

 

 

 

 

.2

جناب مظفر علی شیخ :

اس ایوان کی رائے ہے کہ شادی بیاہ اوردیگر خوشی کے مواقع پر اکثر لوگ نقلی نوٹ پھینکتے ہیں جن پر قائداعظم کی تصویر یا دیگر اسلامی تحریر درج ہوتی ہے جواکثر پاؤں کے نیچے آنے سے بےحرمتی کے زمرے میں آتے ہیں۔ پنجاب اسمبلی کا یہ ایوان مطالبہ کرتا ہے کہ اس امر پر فوری Ban لگایا جائے۔ مزید برآں Printed  شدہ نوٹ مارکیٹ سے فوری طور پر Forfeit کئے جائیں۔

 

.........

 

 

 

.3

شیخ علاؤ الدین :

یہ معزز ایوان وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ (Resident) اور (Non-Resident) پاکستانیوں کے لئے شرح منافع جو (Non-Resident) کے لئے 7% غیرملکی کرنسی پر اور ملکی کرنسی پر 11% تک دیا جا رہا ہے۔ جبکہ (Resident) پاکستانیوں کو غیرملکی کرنسی پر مشکل سے 1% اور پاکستانی کرنسی پر 3% سے 4% دیا جا رہا ہے اور (Resident) پاکستانیوں سے اس منافع پر بھی 35% تک ٹیکس لیا جا رہا ہے جبکہ (Non-Resident) سے منافع کی حد کے قطع نظر صرف 10% لیا جا رہا ہے۔ اس ظلم اور زیادتی کو فوری طور پر ختم کیا جانا ضروری ہے اور یکساں شرح منافع کا ملنا انتہائی ضروری ہے۔

 

.........

 

 

.4

محترمہ خدیجہ عمر :

یہ امر قابل تشویش اور لمحہ فکریہ ہے کہ قرآنی آیات، احادیث مبارکہ، اسماء الحسنیٰ مقدس ہستیوں کے اسماء لکھے ہوئے اخبارات اور مقدس اوراق بازاروں، گلیوں، تعلیمی اداروں میں بکھرے نظر آتے ہیں۔ یہ ایوان سمجھتا ہے کہ حکومت اور دیگر سماجی اداروں کی جانب سے مقدس اوراق کو سنبھالنے کے لئے آگاہی مہم بھی نہیں چلائی جاتی۔ یہ ایوان یہ بھی سمجھتا ہے کہ پنجاب حکومت کا کوئی بھی ڈیپارٹمنٹ قانون نہ ہونے کی وجہ سے مقدس اوراق کو اکٹھا کرنے اور سنبھالنے کا کام نہیں کر رہا۔ لہذا صوبائی اسمبلی پنجاب کا ایوان وفاقی و تمام صوبائی حکومتوں سے مطالبہ کرتا ہے کہ قرآنی آیات، احادیث مبارکہ، اسماء الحسنیٰ مقدس ہستیوں کے اسماء لکھے ہوئے اخبارات اور مقدس اوراق کو مناسب طریقے سے سنبھالنے کے لئے بھرپور آگاہی مہم چلانے اور جلدازجلد قانون سازی کے لئے کارروائی کرے۔

 

........

 

 

 

(موجودہ  قراردادیں)

 

 

 

.1

جناب احسان الحق :

جناب محمد افضل :

اس ایوان کی رائے ہے کہ پنجاب بیت المال 1991 میں قائم ہوا تھا، لیکن 29 برس گزرنے کے باوجود اس کے ضلعی فنڈز میں اضافہ نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے غریب، معذور اور مستحق آبادی بری طرح متاثر ہو رہی ہے جبکہ پنجاب کی آبادی میں کئی گنا اضافہ ہوگیا ہے۔
صوبائی اسمبلی پنجاب کا یہ ایوان مطالبہ کرتا ہے کہ پنجاب بیت المال کے ضلعی فنڈز میں اضافہ کیا جائے۔

 

.......

 

 

 

 

.2

محترمہ خدیجہ عمر :

2007 میں بچوں کے تحفظ کیلئے چائلڈ پروٹیکشن بیورو کا محکمہ بنایا گیا تھا جو اس وقت کی حکومت کا بڑا احسن اقدام تھا۔ یہ ادارہ بے سہارا اور لاوارث بچوں کو تحفظ فراہم کر رہا ہے۔ اپنے قیام سے لے کر آج تک اس محکمہ کے ملازمین کو کنفرم نہیں کیا گیا۔ بےسہارا اور لاوارث بچوں کو تحفظ فراہم کرنے والے ملازمین کو اپنی ملازمتوں کا تحفظ فراہم نہ ہے۔ لہذا اس ایوان کی
رائے ہے کہ چائلڈ پروٹیکشن بیورو کے ملازمین کا سروس سٹرکچر بناتے ہوئے تمام ملازمین کو بھی دیگر سرکاری محکمہ جات کی طرح مستقل کیا جائے اور ریٹائرمنٹ پر پنشن و دیگر سہولیات فراہم کی جائیں۔

 

.........

 

 

 

.3

محترمہ سبرینا جاوید :

انٹرنیشنل ادارے سینٹر آف سائنس ان پبلک انٹرسٹ کی رپورٹ میں غیر متوازن غذا کے استعمال کو امراض قلب اور ذیابیطس کی سب سے بڑی وجہ قرار دیا گیا ہے۔لہذا یہ ایوان صوبائی حکومت سے اس امر کی سفارش کرتاہے کہ دُنیا بھر کے طبی ماہرین کی رائے کے مطابق ایسی فاسٹ فوڈ / غیر صحتمندانہ خوراک پر فی الفور پابندی عائد کی جائے جو انسان کو مختلف بیماریوں میں مبتلا کر رہی ہیں اور جن سے انسان موٹاپا، شوگر اور دل کے امراض میں مبتلا ہو رہے ہیں۔

 

.........

 

 

 

.4

جناب محمد طاہر پرویز :

اس ایوان کی رائے ہے کہ صوبائی دارالحکومت میں تمام چھوٹی بڑی شاہراہوں پر ٹریفک کا بےہنگم رش دن بدن بڑھ رہا ہے، جس کے باعث حادثات کی شرح میں اضافہ ہو رہا ہے اور جس کی بنیادی وجہ شاہراہوں پر سروس روڈ کا نہ ہونا ہے۔ خاص طور پر سائیکل سوار کو بےہنگم ٹریفک کے باعث کافی دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ لہذا  صوبائی اسمبلی پنجاب کا یہ ایوان صوبائی حکومت سے اس امر کی سفارش کرتا ہے کہ صوبائی دارالحکومت میں واقع تمام چھوٹی بڑی سڑکوں کے ساتھ سروس روڈ بنایا جائے۔ نیز آئندہ سے تمام نئے منصوبہ جات میں اس امر کو یقینی بنایا جائے کہ ہر نئی سڑک کے ساتھ سروس روڈ بن سکے اور سائیکل سوار اور پیدل چلنے والوں کے لئے آسانی پیدا ہوسکے۔

 

.........

 

 

 

.5

محترمہ ثانیہ کامران :

اس ایوان کی رائے ہے کہ صوبہ بھر میں کمرشل وہیکلز کے جعلی فٹنس سرٹیفکیٹ جاری ہونے کی وجہ سے حادثات ہو رہے ہیں اور فضائی آلودگی بڑھ رہی ہے۔ اس ایوان کی رائے ہے کہ کمرشل وہیکلز کے فٹنس سرٹیفکیٹ جاری کرنے سے پہلے حقیقی طور پر گاڑیوں کی مکمل جانچ پڑتال ہونا ضروری ہے۔ لہذا صوبائی اسمبلی پنجاب کا ایوان مطالبہ کرتا ہے کہ کمرشل وہیکلز
کی حقیقی طور پر مکمل جانچ پڑتال کرنے اور فٹنس سرٹیفکیٹ جاری کرنے کے عمل کو شفاف بنایا جائے۔

 

 

لاہور

محمد خان بھٹی

مورخہ:5 مئی 2021

سیکرٹری

 


 

 

 

Summary of Proceedings

Not Available

Resolutions Passed

 

قرارداد نمبر:92

 

محرک کا نام:  جناب مظفر علی شیخ (پی پی۔70)

 

" اس ایوان کی رائے ہے کہ شادی بیاہ اوردیگر خوشی کے مواقع پر اکثر لوگ نقلی نوٹ پھینکتے ہیں جن پر قائد اعظم کی تصویر یا دیگر اسلامی تحریر درج ہوتی ہے جو اکثر پاؤں کے نیچے آنے سے بے حرمتی کے زمرے میں آتے ہیں۔ پنجاب اسمبلی کا یہ ایوان مطالبہ کرتا ہے کہ اس امر پر فوری Ban لگایا جائے۔ مزید برآں Printed  شدہ نوٹ مارکیٹ سے فوری طور پر Forfeit کئے جائیں۔"

 

 

 

----------------------------------------

 

قرارداد نمبر:93

 

محرک کا نام:  محترمہ خدیجہ عمر (W-362)

 

" یہ امر قابل تشویش اور لمحہ فکریہ ہے کہ قرآنی آیات، احادیث مبارکہ، اسماء الحسنیٰ مقدس ہستیوں کے اسماء لکھے ہوئے اخبارات اور مقدس اوراق بازاروں، گلیوں، تعلیمی اداروں میں بکھرے نظر آتے ہیں۔ یہ ایوان سمجھتا ہے کہ حکومت اور دیگر سماجی اداروں کی جانب سے مقدس اوراق کو سنبھالنے کے لئے آگاہی مہم بھی نہیں چلائی جاتی۔ یہ ایوان یہ بھی سمجھتا ہے کہ پنجاب حکومت کا کوئی بھی ڈیپارٹمنٹ قانون نہ ہونے کی وجہ سے مقدس اوراق کو اکٹھا کرنے اور سنبھالنے کا کام نہیں کر رہا۔ لہذا صوبائی اسمبلی پنجاب کا ایوان وفاقی و صوبائی حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ قرآنی آیات، احادیث مبارکہ، اسماء الحسنیٰ مقدس ہستیوں کے اسماء لکھے ہوئے اخبارات اور مقدس اوراق کو مناسب طریقے سے سنبھالنے کے لئے بھرپور آگاہی مہم چلانے اور جلدازجلد قانون سازی کے لئے کارروائی کرے۔"